بنو اور بنی – آسمانی سفر

بنو اور بنی ایک چھوٹے سے گاؤں میں رہتے تھے۔ وہ بہن بھائی بہت محبت سے ایک ساتھ کھیلتے، پڑھتے اور جمع ہوتے تھے۔ ان کی مشہوری یہ تھی کہ وہ ہمیشہ مل کر کوئی نئے مسلے سلجھاتے۔

ایک دن، بنو اور بنی کو نیک دل دادیجیے نے ایک کتاب دی جس کے تصاویر آسمانی مناظر تھے۔ وہ دیکھ کر حیران ہوگئے کہ کتاب میں جا کر وہ آسمانی جگہوں کی سیر کرسکتے ہیں۔

بنو نے کہا، “بنی، ہم ایک آسمانی سفر پر جانا چاہتے ہیں۔”
بنی نے مسکرا کر جواب دیا، “ہاں بھائی، یہ بہت مزیدار لگتا ہے!”

بچوں نے اپنی پوری محنت اور مخلصی سے مل کر ایک چھوٹا سا ہوائی جہاز تیار کیا۔ انہوں نے وہ کتاب کھولی اور آسمانی مناظر کو دیکھا۔ بنو کا دل بھر آیا، وہ دیکھ رہے تھے جیسے خود وہاں موجود ہو۔

پہلا مقام جہاز جہاں پہنچا وہ تھا چمکتے ہوئے تاروں کا جھیل۔ دونوں بچے ایک ہی جذبات سے بھر کر چل پڑے، ستاروں کی باتوں میں کھوئے ہوئے۔

دوسرے دن، وہ نیبو گلی کے باغات میں پہنچے، جہاں مختلف رنگوں کے پھول معصومیت سے مسکرا رہے تھے۔

تیسرے دن، آسمانی دھوپ میں چھپے ہوئے پھولوں کے گاؤں کی خوشبو ان کے دل کو بہکا رہی تھی۔

بنو اور بنی نے ہر مقام پر نت نئے کھیل کھیلے، تفریح کی اشیاء بنائیں اور نئی دوستیاں بنائیں۔

آخری دن، جب وہ واپسی سفر کے لئے تیار ہوئے تو وہ اپنے دل میں اس سفر کی قیمت کو سمجھ گئے۔ انہوں نے آخری مقام پر کھڑے ہوکر آسمان کی خوبصورتی کو دیکھا اور دنیا بھر میں جو رنگینیاں ہیں ان کا احترام کیا۔

واپس گاؤں آنے پر، انہوں نے اپنی کہانی سنائی، جس نے گاؤں کے لوگوں کو ان کے آسمانی سفر کی خوشیوں کا حصہ بنایا۔

بنو اور بنی کی کہانی نے سب کو یہ سکھ دیا کہ جہاں بھی ہم جائیں، ہمیں اس جگہ کی قدر کرنی چاہیے اور اس کی خوشیوں کو دوسروں کے ساتھ تقسیم کرنا چاہیے۔

Leave A Reply

Please enter your comment!
Please enter your name here